579

تیری حمد و ثنا ہر سو


ALLAH ho

اَللہ ہُو اَللہ ہُو اَللہ ہُو اَللہ ہُو
اَللہ ہُو اَللہ ہُو اَللہ ہُو اَللہ ہُو

ہر منظر میں تو ہی تو اَللہ ہُو اَللہ ہُو
بلبل کے نغموں میں تو تجھ سے کوئل کی کو کو

تیری حمد و ثنا ہر سو اَللہ ہُو اَللہ ہُو
سُوسَن میں گُلنار میں تو مُشکی ہار سنگار میں تو

سب پھولوں میں تیری بوٗ اَللہ ہُو اَللہ ہُو
دریا میں اشجار میں تو ریگستان کہسار میں تو
تجھ سے صحرا میں آہو اَللہ ہُو اَللہ ہُو

ارض و سما کا خالق تو کُل خِلقت کا مالک تو
ہے تعریف تری ہر سو اَللہ ہُو اَللہ ہُو

چاند میں ہے رخشندہ تو تاروں میں تابندہ تو
تجھ سے روشن ہے جگنو اَللہ ہُو اَللہ ہُو

ہیرا پنّا زر میں تو سِیم و لعل و گہر میں تو
تجھ سے مرجان و لُولو اَللہ ہُو اَللہ ہُو

تسنیم و کوثر میں تو عِرفاں کے ساغر میں تو
تجھ سے مینا جام و سبو اَللہ ہُو اَاللہ ہُو

اطہرؔ کے احساس میں تو بھوک میں تو اور پیاس میں تو
ہے موجِ انفاس میں تو اَللہ ہُو اَللہ ہُو

TERI HAMD O SANA HAR SO


اس پوسٹ پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں