2,046

تیری عطا کا شمار نہیں


میری غفلتوں کی بھی حد نہیں
تیری رحمتوں کی بھی حد نہیں
نہ میری خطا کا شمار ہے
نہ تیری عطا کا شمار ہے

میری بس یہی اوقات ہے
میرے مالک تیری کیا بات ہے
مجھ پر اپنا فضل وکرم نہ چھوڑنا
مجھے اپنے رحم سے نہ موڑنا

آمین ثم آمین

تیری عطا کا شمار نہیں

Meri Ghflton Ki Bhi Hadd Nahi
Teri Rehmton Ki Bhi Hadd Nahi
Na Meri Khta Ka Shumar Hay
Na Teri Ata K Shumar Hay


اس پوسٹ پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں