2,106

آج اشک میرے نعت سنائیں تو عجب کیا


آج اشک میرے نعت سنائیں تو عجب کیا
سن کر وہ مجھے پاس بلائیں تو عجب کیا

آج اشک میرے نعت سنایئں تو عجب کیا

دیدار کے قابل تو نہیں چشم تمنا
لیکن وہ کبھی خواب میں آئیں تو عجب کیا

منہ ڈھانپ کہ رکھنا کہ گنہگار بہت ہوں
میت کو میری دیکھنے آئیں تو عجب کیا

ان پر تو گنہگار کا سب حال کھلا ہے
اس پر بھی وہ دامن میں چھپائیں تو عجب کیا

وہ حسن دو عالم ہیں ادیب ان کے قدم سے
صحرا میں اگر پھول کھل جایئں تو عجب کیا

سید ادیب رائے پوری

Aaj Ashk Meray Naat Sunaen To Ajab Kya
Sun Ker Mjhy Wo Pas Bulaen To Ajab Kya
Deedar Kay Qaabil To Nahi Chashm E Tmanna
Lekin Wo Kbhi Khvab Mein Aen To Ajab Kya
Sayed Adeeb Raye Puri


اس پوسٹ پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں