795

بھلا یہ لوگ قرآن میں غور نہیں کرتے

اَفَلَا يَتَدَبَّرُوۡنَ الۡقُرۡاٰنَ اَمۡ عَلٰى قُلُوۡبٍ اَقۡفَالُهَا‏ ﴿۲۴﴾
بھلا یہ لوگ قرآن میں غور نہیں کرتے یا (ان کے) دلوں پر قفل لگ رہے ہیں- سورة محمد ﴿۲۴﴾

ﺣﻀﺮﺕ ﻋﻠﯽؓ ﻧﮯ ﮐﮩﺎ
ﻻﺧﯿﺮ ﻓﯽ ﻋﺒﺎﺭۃ ﻻﻧﻘۃ ﻓﯿﻤﺎ، ﻭﻻﻓﯽ ﻗﺮﺍۃ ﻻﺗﺪﺑﺮ ﻓﯿﮭﺎ
ﺍﺱ ﻋﺒﺎﺭﺕ ﻣﯿﮟ ﮐﻮﺋﯽ ﺑﮭﻼﺋﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﮯ ﺟﺲ ﻣﯿﮟ ﻓﻘﮧ ﻧﮧ ﮨﻮ ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﻗﺮﺍﺕ ﻣﯿﮟ ﮐﻮﺋﯽ ﺑﮭﻼﺋﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﮯ ﺟﺲ ﻣﯿﮟ ﺗﺪﺑﺮ ﻭ ﺗﻔﮑﺮ ﻧﮧ ﮨﻮ

مردہ دل

{اَفَلَا یَتَدَبَّرُوْنَ الْقُرْاٰنَ: تو کیا وہ قرآن میں غور وفکر نہیں کرتے؟} یعنی جن کے دلوں میں نفاق کے قفل لگے ہیں وہ نہ تو قرآنِ کریم میں غوروفکر کر سکتے ہیں اورنہ ہی وہ ہدایت حاصل کرسکتے ہیں کیونکہ ان کے دلوں پرتالے لگے ہوئے ہیں جس کی وجہ سے حق کی بات ان میں پہنچ ہی نہیں پاتی۔

تدبُّر قرآنِ پاک میں گہرے غور و خوض کو کہتے ہیں جو تعصبات اور جانبداری سے پاک اورعقل و نقل کے حقیقی تقاضو ں کے مطابق ہو۔

ﯾﮧ ﺣﻘﯿﻘﺖ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺗﻼﻭﺕ ﮐﺮﻧﮯ ﭘﺮ ﺍﺟﺮ ﻭ ﺛﻮﺍﺏ ﻣﻠﺘﺎ ﮨﮯ ﻟﯿﮑﻦ ﯾﮧ ﺑﺎﺕ ﺑﮭﯽ ﺳﭻ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺗﻼﻭﺕ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﺳﺎﺗﮫ ﻏﻮﺭ ﻭ ﻓﮑﺮ ﺍﻭﺭ ﺗﺪﺑﺮ ﺑﮭﯽ ﺿﺮﻭﺭﯼ ﮨﮯ ﮐﯿﻮﮞ ﮐﮧ ’’ ﻗﺮﺁﻥ ﻣﺠﯿﺪ ﮐﯽ ﺣﻘﯿﻘﯽ ﻗﺪﺭ ﻭ ﻗﯿﻤﺖ ﺍﻭﺭ ﺑﺮﮐﺖ ﺍﺱ ﮐﮯ ﻣﻌﺎﻧﯽ ﻣﯿﮟ ﻣﻀﻤﺮ ﮨﮯ۔ﻟﻔﻆ ﺗﻮ ﻣﻌﻨﯽٰ ﮐﮯ ﺍﺩﺭﺍﮎ ﮐﺎ ﻣﺤﺾ ﺍﯾﮏ ﺫﺭﯾﻌﮧ ﮨﻮﺍ ﮐﺮﺗﺎ ﮨﮯ، ﺁ ﮞ ﺣﻀﺮﺕ ﺻﻠﯽ ﺍﻟﻠﮧ ﻋﻠﯿﮧ ﻭ ﺳﻠﻢ ﮐﮯ ﺍﺭﺷﺎﺩ ’’ ﺟﺲ ﻧﮯ ﺍﯾﮏ ﺣﺮﻑ ﭘﮍﮬﺎ ﺍﺱ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﺩﺱ ﻧﯿﮑﯿﺎﮞ ﮨﯿﮟ ‘‘

قرآن پڑھنے کا ﮨﺮﮔﺰ ﯾﮧ ﻣﻘﺼﺪ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﮧ ﻣﺴﻠﻤﺎﻥ ﮐﺴﯽ ﺟﮕﮧ ﺑﯿﭩﮫ ﮐﺮ ﻣﺤﺾ ﺍﻟﻔﺎﻅ ﭘﮍﮪ ﻟﮯ ﺍﻭﺭ ﻣﻔﮩﻮﻡ ﻭ ﻣﻄﻠﺐ ﻧﮧ ﺳﻤﺠﮭﮯ۔ ﺍﮔﺮ ﮐﺴﯽ ﻃﺎﻟﺐِ ﻋﻠﻢ ﮐﺎ ﻭﺍﻟﺪ ﺍﺳﮯ ﯾﮧ ﮐﮩﺘﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ’’ ﺑﯿﭩﺎ ﭘﮍﮬﻮ ‘‘ ﺗﻮ ﺍﺱ ﮐﺎ ﻣﻘﺼﺪ ﯾﮧ ﮨﺮﮔﺰ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺑﯿﭩﺎ ﻣﺤﺾ ﺍﻟﻔﺎﻅ ﭘﮍﮪ ﻟﮯ ﺍﻭﺭ ﺳﺒﻖ ﮐﻮ ﻧﮧ ﺳﻤﺠﮭﮯ- ﻟﮩﺬﺍ ﺍﺳﯽ ﻣﻘﺼﺪ ﮐﻮ ﺍﻟﻠﮧ ﻋﺰ ﻭ ﺟﻞ ﻧﮯ ﺍﺱ ﺁﯾﺖ ﻣﯿﮟ ﻭﺍﺿﺢ ﮐﯿﺎ ﮨﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ،

ﻻﮐﺸﺐ ﺍﻧﺰﻝ ﺍﻟﻠﮧ ﺍﻟﯿﮑﻤﺒﺮﮎ ﻟﯿﺪ ﺑﺮﻭﺍ ﺍﯾٰٰﺘﮧٰ ﻭ ﻟﯿﺬﮐﺮﺍﻭ ﻟﻮﺍ ﺍﻻﻟﺒﺎﺏ
ﯾﮧ ﺑﺎﺑﺮﮐﺖ ﮐﺘﺎﺏ ﮨﮯ ﺟﺴﮯ ﮨﻢ ﻧﮯ ﺁﭖ ﮐﯽ ﻃﺮﻑ ﺍﺱ ﻟﺌﮯ ﻧﺎﺯﻝ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﻟﻮﮒ ﺍﺱ ﮐﯽ ﺁﯾﺘﻮﮞ ﭘﺮ ﻏﻮﺭ ﻭ ﻓﮑﺮ ﮐﺮﯾﮟ ﺍﻭﺭ ﻋﻘﻠﻤﻨﺪ ﺍﺱ ﺳﮯ ﻧﺼﯿﺤﺖ ﺣﺎﺻﻞ ﮐﺮﯾﮟ- ﺳﻮﺭۃ ﺹ : ۲۹

ﻗﺮﺍﺕ ﮐﺎ ﻣﻘﺼﻮﺩ ﮨﯽ ﻏﻮﺭ ﻭ ﻓﮑﺮ ﮐﺮﻧﺎ ﮨﮯ ﺍﺳﯽ ﻟﺌﮯ ﻗﺮﺍﺕ ﮐﺎ ﻃﺮﯾﻘۂ ﺗﻼﻭﺕ ﺗﺮﺗﯿﻞ ﺑﺘﺎﯾﺎ ﮔﯿﺎ ﮨﮯ۔ ﺍﺱ ﻟﺌﮯ ﮐﮧ ﺗﺮ ﺗﯿﻞ ﺗﻮ ﻇﺎﮨﺮﺍً ﮨﻮﺗﯽ ﮨﮯ ﻟﯿﮑﻦ ﺧﻮﺩ ﺑﺨﻮﺩ ﻣﻌﺎﻧﯽ ﺳﻤﺠﮫ ﻣﯿﮟ ﺁ ﺟﺎﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﺍﺳﯽ ﻟﺌﮯ ﺍﻟﻠﮧ ﺭﺏ ﺍﻟﻌﺰﺕ ﻧﮯ ﻗﺮﺁﻥ ﮐﻮ ﺗﺮﺗﯿﻞ ﺳﮯ ﭘﮍﮬﻨﮯ ﮐﺎ ﺣﮑﻢ ﺩﯾﺎ ﮨﮯ ﻓﺮﻣﺎیا

ﻭﺭﺗﻞ ﺍﻟﻘﺮﺁﻥ ﺗﺮﺗﯿﻼ
ﺍﻭﺭ ﻗﺮﺁﻥ ﮐﻮ ﭨﮭﮩﺮ ﭨﮭﮩﺮ ﮐﺮﭘﮍﮬﺎ ﮐر- ﺳﻮﺭۃ ﺍﻟﻤﺰﻣﻞ : ۴

Kiya Ye Quran Mein Ghoor o Fikar Nahin Karty?
Ya Un Kay Diloon Par Taalay Lag Gaay Hain
Surah Muhammad: 24

اس پوسٹ پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں