1,349

ضربِ کلیم (علامہ محمد اقبال)

اس قوم کو شمشیر کی حاجت نہیں رہتی
ہو جس کے جوانوں کی خودی صورت فولاد

ناچیز جہان مہ و پرویں ترے آگے
وہ عالم مجبور ہے ، تو عالم آزاد

موجوں کی تپش کیا ہے ، فقط ذوق طلب ہے
پنہاں جو صدف میں ہے ، وہ دولت ہے خدا داد

شاہیں کبھی پرواز سے تھک کر نہیں گرتا
پر دم ہے اگر تو تو نہیں خطرۂ افتاد

علامہ محمّد اقبال

اسرار پیدا - ضربِ کلیم

Is Qoom Ko Shamsheer Ki Aadat Nahin Rehti
Ho Jiss Kay Nojawanoon Ki Khudi Surat Foolad
Allama Muhammad Iqbal

اس پوسٹ پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں