893

سُورَۃُ الاخلَاص کا ترجمہ

سُورَۃُالِاخلَاص

کہو کہ وہ اللہ ایک ہے

اللہ بے نیاز ہے

نہ اُس کی کوئی اولاد ہے

اور نہ وہ کسی کی اولاد ہے

اور کوئی اُسکا ہمسر نہیں

سُورَۃُالِاخلَاص کا ترجمہ

صر ف چار آیات پر مشتمل سورت،جس کی تلاوت کا ثواب ایک تہائی قرآن کے برابر، محبت کرنے والو ں کو جنت اوراﷲ تعالیٰ کی محبت کی بشارت
توحید ، رسالت اور آخرت۔ دین اسلام کے تین اہم ترین عقاید ہیں،سورۂ اخلاص عقیدہ ٔ توحید کوبیان کرتی اور وحدت ِ ِمعبود کے اصول تا قیامت طے کرتی ہے،اس کے ساتھ ساتھ یہ چار آیات مبارکہ پر مشتمل سورت ادیان باطلہ اور عقائدِ فرقِ ضالہ کا ردبھی کرتی ہے ،اور بتاتی ہے کہ اﷲ تعالیٰ کے سوا تمام معبود باطل ،شیطان کی پھیلائی ہوئی گم راہی اور انسانی خواہشات کی ایجادہیں اور ان کے نام بھی اسی شیطان کے دیے ہوئے ہیں۔ذیل میں احادیث ِمبارکہ کی روشنی میں اس عظیم سورت کے فضائل ذکر کیے جاتے ہیں،جس کی تلاوت کا ثواب ایک تہائی قرآن یعنی تقریباً 2022آیات کی تلاوت کے برابرہے ،جس سے محبت کرنے والو ں کو جنت اوراﷲ تعالیٰ کی محبت اور دوستی کی بشارت دی گئی ہے:

حضرت ابو ہریرہ رضی اﷲ عنہ فرماتے ہیں : صحابہ کرام رضی اﷲ عنھم سے ایک مرتبہ رسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: جلدی جمع ہوجاؤ،میں ابھی تمھارے سامنے تہائی قرآن کی تلاوت کروں گا۔ بہت سے لوگ جمع ہوگئے۔ آپ صلی اﷲ علیہ وسلم حجرہ شریف سے باہر تشریف لائے اور سورہ ٔ اخلاص کی تلاوت فرمائی اور واپس لوٹ گئے۔ ہم ایک دوسرے کے ساتھ گفت گوکرنے لگے کہ آپ صلی اﷲ علیہ وسلم نے تو فرمایا تھا: میں تمھارے سامنے تہائی قرآن کی تلاوت کروں گا، شاید آسمان سے کوئی وحی نازل ہوگئی ہے۔ تھوڑی دیر بعد حضور صلی اﷲ علیہ وسلم باہر تشریف لائے۔ ارشاد فرمایا : میں نے تمھیں کہا تھا کہ میں تمہارے سامنے تہائی قرآن کی تلاوت کروں گا۔ ذراغور سے سنو۔یہ سورت تہائی قرآن کے برابر ہے۔

حضرت ابو سعید خدری فرماتے ہیں، نبی کریم صلی اﷲ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: قسم ہے مجھے اس ذات کی جس کے قبضہ قدرت میں میری جان ہے! یہ تہائی قرآن کے برابر ہے۔ایک اور روایت میں ہے کہ نبی پاک صلی اﷲ علیہ وسلم نے اپنے صحابہ کرام رضی اﷲ عنھم سے ارشاد فرمایا : کیا تم میں سے کوئی اس بات سے عاجز ہے کہ وہ رات کو ایک تہائی قرآن پڑھ لیا کرے؟صحابہ کرام کو یہ بات بڑی مشکل لگی،انھوں نے عرض کی :یارسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم!ہم میں سے کون اس کی طاقت رکھ سکتا ہے! آپ صلی اﷲ علیہ وسلم نے فرمایا:’’قل ھو اللّٰہ احد‘‘ تہائی قرآن کے برابر ہے۔

حضرت قتادہ بن نعمان رضی اﷲ عنہ پوری رات اس سورۃ مبارکہ کی تلاوت کیا کرتے تھے، نبی کریم صلی اﷲ علیہ وسلم سے اس کا ذکر کیا گیا تو آپ صلی اﷲ علیہ وسلم نے فرمایا: قسم ہے اس ذات کی جس کے قبضہ قدرت میں میری جان ہے! یہ نصف یا تہائی قرآن کے برابر ہے۔

حضرت ابی ابن کعب رضی اﷲ عنہ سے مروی ہے کہ رسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: جس نے’’قل ھو اللّٰہ احد‘‘ پڑھی، اس نے ایک تہائی قرآن پاک پڑھا۔حضرت ابو دردا ، حضرت ابو سعید خدری، حضرت قتادہ ، حضرت انس بن مالک اور کئی دوسرے صحابہ کرام رضی اﷲ عنہم سے بھی اس کی مثل روایات مروی ہیں۔

حضرت عائشہ صدیقہ رضی اﷲ عنھاروایت کرتی ہیں کہ رسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم نے ایک صحابی کو ایک دستے کا امیر بنا کر جہاد کے لیے بھیجا ۔وہ ہر نماز میں قراء ت کے آخر میں سورۂ اخلاص پڑھتے تھے۔ جب وہ واپس لوٹے تو انھوں نے اس کا ذکر نبی کریم صلی اﷲ علیہ وسلم سے کیا۔ آپ صلی اﷲ علیہ وسلم نے فرمایا: اسے یہ خبر دو کہ اﷲ بھی تمھیں دوست رکھتا ہے۔

اس سورت کی مخصوص تعداد میں تلاوت کے فضائل بھی احادیث ِ طیبہ میں وارد ہوئے ہیں،ذیل میں ان میں سے بعض فضائل کا ذکر کیا جاتا ہے:
حضرت جابر بن عبد اﷲ رضی اﷲ عنھماسے مروی ہے کہ رسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: تین عمل ایسے ہیں کہ جن کو اگر کوئی ایمان کی حالت میں کرتا ہے تو وہ جنت کے جس دروازے سے چاہے گا، داخل ہوجائے گااورجس حور سے چاہے گا، نکاح کرلے گا:(ا)جو اپنے قاتل کو معاف کردے(۲)جوخفیہ طور پرکسی کا قرض ادا کردے(۳)جوہر فرض نماز کے بعددس مرتبہ سورہ اخلاص پڑھے۔حضرت ابو بکر صدیق رضی اﷲ عنہ نے رسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم کی خدمت میں عرض کی : یارسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم !اگر ان میں کوئی ایک کام کرے۔ فرمایا: اسے بھی یہی درجہ حاصل ہوگا۔
حضرت جریر بن عبد اﷲ رضی اﷲ عنھماسے مروی ہے کہ رسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم نے فرمایا: جس نے اپنے گھر داخل ہوتے وقت’’قل ھواللّٰہ احد‘‘ پڑھی، یہ سورت اس کے گھر اور پڑوسیوں کے گھر سے شر کو دور بھگا دیتی ہے۔

حضرت عائشہ صدیقہ رضی اﷲ عنھاسے مروی ہے کہ نبی کریم صلی اﷲ علیہ وسلم رات کے وقت جب بستر پر تشریف لے جاتے تو ہر رات ان تینوں سورتوں کو پڑھ کر اور اپنی دونوں ہتھیلیوں کو ملا کر دم کرتے اور جہاں تک ہاتھ پہنچ سکتے، اپنے جسم مبارک پر پھیرتے ۔ پہلے سرمبارک پر، پھر منہ مبارک پر اور پھر باقی جسم مبارک پر اور یہ عمل تین مرتبہ دہراتے۔

Surah Ikhlas
Kaho Keh Vo Allah Aik Hay
Allah Bay Nyaaz Hay
Na Us Ki Koi Olaad Hay
Aur Na Wo Kisi Ki Olaad Hay
Aur Uska Koi Humsir Nahi

اس پوسٹ پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں