2,690

بچوں کو اللہ کی پناہ میں دینے کی دعا


رسول اللہﷺ حسن اور حسین رضی اللہ عنہ کو ان کلمات کے ساتھ پناہ دیا کرتے تھے

میں تم دونوں کو اللہ کے کامل کلمات کے ساتھ ہر شیطان اور زہریلے جانور سے اور ہر لگ جانے والی نظر سے اللہ کی پناہ میں دیتا ہوں۔
(بخاری ٣٣٧١)

نظر بد جسے زخمِ چشم یا نظر لگنا بھی کہا جاتا ہے- نظر بد کا انکار ممکن نہیں ہے- ہمیں انبیاء کی تاریخ میں ایک واقعہ ملتا ہے کہ جب حضرت یعقوبؑ کے گیارہ فرزند اپنے بھائی حضرت یوسف ؑ سے جو اس وقت مصر کے حکمران بن چکے تھے۔ ملاقات کے ارادے سے کنعان سے روانہ ہونے لگے تو حضرت یعقوبؑ نے اپنے گیارہ فرزندوں کو ہدایت کی کہ تم سب ایک دروازے سے داخل نہ ہونا، کیونکہ تمہاری تعداد سے اندیشہ ہے کہ کہیں نظر نہ لگ جائے۔

صحیح مسلم میں ہے کہ حضور اکرمؐ نے فرمایا:
’’نظر لگنا حق ہے اگر کوئی چیز تقدیر سے سبقت کرنے والی ہے تو وہ نظر بد ہے۔

آپؐ کا ایک اور فرمان ہے کہ میری امت میں قضا و قدر کے بعد اکثر موت نظر لگنے سے ہوگی۔ نیز آپؐ نے فرمایا نظر انسان کو قبر تک پہنچا دیتی ہے اور اونٹ کو ہانڈی تک میری امت کی اکثر ہلاکت اسی میں ہے(تفسیر ابن کثیر)

ابن ماجہ میں ہے کہ سہیل بن حنیفؓ صحابی رسولؐ کو ان کے کسی ساتھی کی نظر لگی اور بے ہوش ہو کر گر پڑے۔ رسول اکرمؐ کو خبر ہوئی تو آپؐ نے فرمایا: ’’تم میں سے کوئی کیوں اپنے بھائی کو قتل کرتا ہے یعنی نظر لگاتا ہے جب تم میں سے کوئی اپنے بھائی کی کسی ایسی چیز کو دیکھے اور وہ اس کو اچھی لگے تو اس کو چاہیے کہ اس کے لئے برکت کی دعا کرے۔

Rasool Allah (S.A.W) Hassan Aur Husain(R.A) Ko In Klmaat Kay Sath Pnah Dia Krtay Thay
Euzu Bi Kelimatillahi’t-tammeti Min kulli Seytanin ve Hammetin Ve Min kulli Aynin Lammeh
Translation: Mein Tum Dono Ko Allah Kay Klmaat Kay Sath Her Shetan Aur Zehrilay Janwer Say Aur Her Lagg Janay Vali Buri Nazr Sy Allah Ki Pannah Mein Deta Hun. (Bukhari)


اس پوسٹ پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں