787

محبّت وانتقام


محبّت قدرت کی طرف سے ودیعت ہوتی ہے- جس کو آپ سے محبّت نہیں ہے، آپ چاند تارے بھی توڑ کر لائیں تو وہ آپ سے محبّت کرہی نہیں سکے گا- کسی بھی انسان کے پیچھے پاگل ہونے سے صرف اپنا نقصان ہوتا ہے- اسی طرح جو لوگ انتقام کی آگ میں جلتے ہیں وہ بدلہ لینے کے بعد بھی خوشی نہیں حاصل کر سکتے- انتقام تو کسی دوسرے کی بربادی ہوتا ہے، یہ بھلا کسی کو خوشی کیسے دے سکتا ہے؟
سانس ساکن تھی سے اقتباس

Mohabat o Inteqaam


اس پوسٹ پر اپنی رائے کا اظہار کریں

محبّت وانتقام” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں