883

دل کا کہا اللہ سنتا ہے

زبان کا کہا دنیا سنتی ہے
اور دل کا کہا اللہ سنتا ہے

دل کا کہا اللہ سنتا ہے

آپ کولگتا ہے کہ اللہ دعائیں سنتا ہے … مانگنے پر دیتا ہے … وہ محبت کرتا ہے ہم سے … اور اللہ محبت ہے !

مگر وہ دعا نہیں ہر لفظ پر لفظ سنتا ہے مانگنے سے پہلے دیتا ہے ، زبان تک بات آنے سے پہلے دل کی سن لیتا ہے، رونے پر مسکراھٹ دیتا ہے بکھرنے پر ستارے کے پانچ کونوں کی طرح جوڑتا ہے- آپ کہتے ہیں ‘اللہ محبت ہے’ مگر اللہ تو راز ہے محبت کا ! سراپا نور ہے’ کہ جس پر اسکے نور کی تجلی پڑ جائے وہ اللہ کے رنگ میں رنگ جاتا ہے جسے اللہ چاہتا ہے اور جو اللہ کو چاہتا ہے .. ہمیں مانگنا نہیں پڑتا اور اللہ دے دیتا ہے کیونکہ زبان سے ہم دنیا کو کہتے ہیں مگر اللہ دل میں ہے وہ تو دل ہی جانتا ہے-

جب دل کی گہرائیوں سے الفاظ دعا بن کے نکلتے ہیں تو میرا رب ان لفظوں کو قبولیت کی خوبصورت چادر اوڑھا دیتا ہے- یہی یقین ہو کہ وہ اپنا ہے وہ دل کے رازوں کو جانتا ہے تو سب ٹھیک ہو جائے گا سب مل جائے گا – بس ایک یقین ہی تو چاہیے گمان نہیں یقین کامل

دعا کی راس یقین یقین اور ہر لمحہ یقین … جو مصبیت ٹوٹ پڑنے پر بھی نہ روٹھے، جو دلوں کے ٹوٹ جانے پر بھی نہ ٹوٹے اور ہمارا رب مسکرا دے اورکہہ دے

فرشتو یہی ہے میرا بندہ …بس میرا بندہ اسکے دل کی آرزو پوری کر دو !

وہ ہے حی قیوم شہ رگ سے نزدیک
مصیبت میں اس کو بلا کر تو دیکھو

Zuban Ka Kaha Duniya Sunti Hay
Aur Dil Ka Kaha Allah Sunta Hay

اس پوسٹ پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں